پیاز کے حیران کن فوائد


index

پیاز کے حیران کن فوائد

پیاز، خاص طور پر سرخ پیاز،  قدرت کی  ایک نعمت غیر مترقبہ ہے ۔ متعدد سائنسی تحقیقات کے مطابق یہ سبزی اینٹی آکسیڈنٹ مادوں سے بھرپور ہوتی ہے اور ذیا بیطس اورکینسر جیسی بیماریوں سے لڑنے میں بھی انسانی جسم کو مدد فراہم کرتی ہے۔ پیاز ناصرف صحت کے فوائد سے ہمیں مالا مال کرتے ہیں بلکہ ان کے کئی دیگر شاندار استعمال بھی ہیں۔ پیا ز کے کیمیائی تجربے سے معلوم ہو ا ہے کہ اس میں حیا تین  اور دوسرے اجزاءبڑی تعداد میں مو جو د ہو تے ہیں۔ ان میں شائستہ چونا، تا نبا، فولا د، گندھک، میگنیشیم، پو ٹا شیم اور میتھا ئی ڈی ما ئیڈ شامل ہیں۔

images ننن
پیاز ایک مفید غذا ہے جس میں فاسفورس کے علاوہ فولاد بھی پایا جاتا ہے جو ہمیں صحت مند رکھنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ پیاز کے بغیر کوئی ڈش مکمل نہیں ہوتی  اور یہ ہمارے باورچی خانہ کا اہم عنصر ہے۔ پیاز کو سلاد کے طور پر اپنی روزہ مرہ خوراک کے ساتھ ضرور استعمال کریں کیونکہ دال یا سبزی کے ساتھ کھانے سے خون میں شکر کی سطح کم رہتی ہے جس سے شوگر جیسی موذی بیماری سے بچا جا سکتا ہے۔ پیاز میں کرومیم ہوتی ہے جو کہ شوگر کے اثرات میں کمی کرتی ہے۔اگر پیاز کے اوپر ایک لیموں نچوڑ لیا جائے تو نہ صرف ذائقہ میں اچھا ہو گا بلکہ یہ ہماری صحت کے لئے بھی اچھا ہو گا۔ اس کے علاوہ پیاز ہمیں گرمیوں میں لو لگنے سے بھی بچاتا ہے۔

قوت باہ کو بڑھانے کے لئے پیازانتہائی فائدہ مند سبزی ہے۔پیاز ایسی چیز ہے جس کے کوئی نقصانات نہیں ہیں بلکہ یہ قوت باہ بڑھانے میں انتہائی مفید ثابت ہوتاہے  لیکن اسے دن میں کس وقت کھانا چاہیے کہ یہ فائدہ دے کیونکہ اگر یہ دن میں کسی غلط وقت کھالیا جائے تو یہ نقصان بھی پہنچا سکتا ہے۔ماہرین کا کہناہے کہ قوت باہ کو بڑھانے کے لیے پیاز کا استعمال دوپہر کے کھانے کے ساتھ کرنا چاہئے اوراگر اس کا باقاعدگی سے استعمال کیا جائے تومرد وں کو کسی قسم کی بھی ادویات کا سہارا نہیں لینا پڑے گا اور ازدواجی زندگی میں کسی قسم کی شرمندگی بھی نہیں اٹھانی پڑے گی۔ماہرین کا کہناہے کہ کچھ ایسے اوقات بھی ہیں جن میں پیاز کا استعمال صحت کے لیے انتہائی مضر ہے ۔پیازکو صبح یا شام کے وقت بالکل استعمال نہیں کرناچاہیے کیونکہ ان اوقات میں ا س کا استعمال قوت باہ کومزید کم کر دے گا۔شام کے وقت پیاز کھانا مردوں کے لئے انتہائی خطرناک ہے لہذا رات کے کھانے میں اسے ہاتھ بھی مت لگائیں۔

imagesککک
Nutrition Facts
Serving size:
1 medium onion
(5.3 oz / 148 g)
Calories 45
Calories from Fat 0
*Percent Daily Values (%DV)
are based on a 2,000 calorie diet. Amt per Serving %DV* Amt per Serving %DV*
Total Fat 0g 0% Total Carbohydrate 11g 4%
Cholesterol 0mg 0% Dietary Fiber 3g 12%
Sodium 5mg 0% Sugars 9g
Potassium 190mg 5% Protein 1g
Vitamin A 0% Calcium 4%
Vitamin C 20% Iron 4%

ففف
پیاز کھانے کا ایک فائدہ یہ ہے کہ یہ ہمارے خون کو پتلا رکھتا ہے کیونکہ اس میں سلفائڈ وافر مقدار میں موجود ہوتا ہے۔یہ بلڈ پریشر کو کنٹرول کرتا ہے ۔ کچا پیاز کھانے سے ہمارے جسم کاکولیسٹرول لیول نارمل رہتا ہے۔  پیاز دل کی بیماریوں سے محفوظ رکھتا ہے۔ سرخ پیاز کا استعمال سے کینسر ، خاص طور پر پراسٹیٹ کینسر کی بیماری میں مفید ہے۔

imagesددد

یہ بریسٹ کینسر، کولن کینسر، اویورین کینسر اور پھیپھڑوں کی ٹیومر کےلئے مفید ہے۔اس کے علاوہ پیاز پھیپڑوں کے کام کرنے کے نظام کی مدد کرتا ہے۔اگر ہم اس کا استعمال روز مرہ کی بنیاد پر کریں تو ہم میں ذیابیطس کے ہونے کےچانس بھی کم رہ جاتے ہیں۔اس کے علاوہ پیاز ہمیں موسمی بیماریوں سے بچنے میں ہماری مدد کرتا ہے۔دمہ میں کچا پیاز کھانا مفید رہتا ہے۔پیاز پارکنسن کی بیماری اور فالج سے بچاتا ہے۔

imagesسسس
دوسری جنگ عظیم میں زخمی سپاہیو ں کا علاج کچے پیا ز سے کیا گیا۔

زخم پر پیا ز باندھنے سے آرام آتا دو دن کے اندر زخم خشک ہونا شروع ہو جا تا۔ گلے کے بڑھے ہو ئے غدود، کالی کھانسی، دمہ، پھےپھڑے اور حلق کی بیما ریاں نزلہ، زکام ذیابےطس، سر درد، مرگی، معدے کے زخم کے امراض میں پیاز کا استعمال شفا بخش ہے ۔ زہریلے، کےڑ ے سانپ، بچھو کا ٹ لے تو جسم کے اس حصے پر پیا ز اور نو شا در کا پانی لگائیے سوزش جا تی رہے گی۔ پیاز کو پکا کر کھلانے سے یرقان‘ پرانی کھانسی‘ سینے کی جلن اور بلغم کے انجماد میں خاص طور پر فائدہ ہوتا ہے۔ اسے کھانے سے پیشاب بار بارآتا ہے۔ سرکہ میں اگر اس کا اچار بنا کر استعمال کیا جائے تو تلی کے درد میں فائدہ ہوتا ہے۔ صفراوی متلی وغیرہ دور ہوتی ہے۔ آنکھ کی سوزش‘ سفیدی اور موتیا بند کی ابتداء میں پیاز کا عرق شہد میں ملا کر آنکھ میں لگانے سے اکثر فائدہ ہوتا ہے۔ پیاز کوکوٹ کر 4 سے ساڑھے چار تولہ مقدار میں دینے سے بچھو کے زہر کا اثر زائل ہوجاتا ہے۔
یاز کو پیس کر اس کا لیپ بالوں پر لگانے سے سیاہ بال اگنے شروع ہو جاتے ہیں۔ بدن پر سیاہ داغ ہوں تو ان پر پیاز کا عرق لگاتے رہنے سے سیاہ داغ ختم ہو جاتے ہیں۔ پیاز کا عرق آدھا چھٹا نک صبح صبح نہارمنہ پیتے رہنے سے گردے مثانے کی پتھری خارج ہو جاتی ہے۔ پیاز کا عرق چند قطرے کان میں ٹپکانے سے کان کا درد ختم ہو جاتا ہے۔ گنٹھیا کیلئے پیاز کا عرق اور رائی کا تیل ملا کر جوڑوں پر مالش کرنے سے درد کو آرام ہوتا ہے۔ پیاز، ہیضہ سے محفوظ رکھنے کی نہایت عمدہ اور آسان تدبیر ہے
پیاز کو خوب صورتی میں اضافہ کرنے کے لئے بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ اس کا جوس چہرے کوصاف کرنے کے لئے کلینرز کے طور پر استعمال کیاجاتا ہے۔ پیاز کے عرق کو شہداور سفید موم کے ساتھ ملاکر چہرے پر لگانے سے جھریاں ختم ہو جاتی ہیں۔
تمدن عر ب نامی کتاب میں فرانسیسی مصنف ڈاکڑ گیتا وابان لکھتا ہے کہ کھجو ر کے بعد عربو ں کا بہترین اور پسندیدہ غذا لہسن اور پیاز جیسی سبزیا ں تھیں ۔گنج کا بہترین علاج پیا ز کا عرق ہے اس کے مسلسل مالش سے بال دوبارہ اگ آتے ہیں۔
شہنشا ہ ہما یو ں حقے کا شو قین تھا۔ طبیبو ں نے تمبا کو کے مضر اثرات سے بادشاہ کو محفوظ رکھنے کے لیے یہ نسخہ ایجا د کیا کہ حقے میں استعمال ہونے والے تمبا کو پیاز کے عرق میں بھگو دیتے تھے۔ پیاز جراثیم کش ہے۔ خون میں تیزابی مادو ں کو پیاز کا مسلسل استعمال ختم کردیتا ہے۔ پیا ز خون کے بڑھتے دباﺅ کو کم کر دیتا ہے۔ پیا ز کا مسلسل استعمال دل کے دورے سے محفوظ رکھتا ہے۔ بر طانیہ میں تجر بے کے طور پر اسپتا لو ں میں مریضوں کو ایسی دوائیںدی گئی جن میں پیاز کا عنصر شامل تھا وہ مریض صحت یا ب ہو گئے روم کے بادشاہ نیرو (Nero) کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ اپنی آواز کو بہتر بنانے کے لیے پیاز کھایا کرتا تھا۔
گلے کی خرابی سے نجات کے لئے پیاز کو پانی میں ابال لیجئے اور اس پانی کو چائے کی طرح پیجئے۔
اگر جلد جھلس جائے تو اس پر بھی پیاز لگانے سے راحت محسوس ہوتی ہے۔
اگر جلد میں کوئی کانٹا وغیرہ چبھ جائے جو کہ جلد کے اندر پیوست ہو تو اسے نکالنے کے لئے اس کے اوپر تقریباً ایک گھنٹے کے لئے پیاز باندھ کر رکھیں۔

وارننگ
بہت زیادہ مقدار میں پیاز خاص کر سبز پیاز کا کھانا، گیس و اپھارا و معدہ کی جلن پیدا کرتا ہے۔ یہ خون کو پتلا کرنے والی ادویات کی افادیت پر اثرانداز ہوتا ہے۔کچھ لوگوں کو پیاز سے الرجی بھی ہو سکتی ہے۔

Advertisements