ہیٹ اسٹروک سے بچاﺅ کی تدابیر


l_86964_062647_updates

ہیٹ اسٹروک سے بچاﺅ کی تدابیر

ملک کے مختلف حصوں میں شدید گرمی اور لو کے باعث متعدد ہلاکتیں ہوچکی ہیں اور اہم بات یہ ہے کہ کچھ احتیاطبی تدابیر کو اپناکر ان پر قابو پایا جاسکتا ہے بس اس وقت پریشان ہوکر بدحواس ہونے کی بجائے ذہن کو حاضر رکھا جائے۔

heat-stroke-symptoms
سب سے پہلے تو لو لگنے یا ہیٹ اسٹروک کی وجوہات جان لیں جو اس کا خطرہ بڑھا دیتی ہیں۔
• جسم میں پانی کی کمی
• گرم و خشک موسم
• گرم موسم میں سخت مشقت یا ورزش
• دھوپ میں براہ راست بہت زیادہ گھومنا
• گھر سے باہر کام یا آﺅٹ ڈور ورکنگ
علامات
ہیٹ اسٹروک کے نتیجے میں لاحق ہونے والی ایمرجنسی جان لیوا بھی ثابت ہوسکتی ہے تاہم اس کی علامات بھی ظاہر ہوتی ہیں جو کہ درج ذیل ہیں۔ جسمانی درجہ حرارت 104 فارن ہائیٹ ہوجانا۔
• غشی طاری ہونا
• جسم سے پسینے کا اخراج رک جانا
• دل کی دھڑکن بہت زیادہ بڑھ جانا
• جلد سرخ، گرم اورخشک ہوجانا
• کمزوری اور نقاہت طاری ہونا
• چکر آنا ،سر گھومنا
• رنگت سرخ ہونا ۔اور جلد پر خشکی آنا
• ألٹی اور قے آنا
• اچانک بخار چڑھنا
• بلڈ پریشر ایک دم گرنا
ایسے میں کیا کرنا چاہئے

سب سے پہلے تو ایمبولینس کوطلب کریں یا متاثرہ شخص کو خود ہسپتال لے جائیں (طبی امداد میں تاخیر جان لیوا ثابت ہوسکتی ہے)۔ ایمبولینس کے انتظار کے دوران مریض کو کسی سایہ دار جگہ پر منتقل کردیں۔
• مریض کو فرش پر لٹا دیں اوراسکے پیر کسی اونچی چیز پر رکھ دیں (تاکہ دل کی جانب خون کا بہاﺅ بڑھ جائے اور شاک کی روک تھام ہوسکے)۔
• مریض کے کپڑے ٹائٹ ہوں تو ان کو ڈھیلا کردیں۔
• مریض کے جسم پر ٹھنڈی پٹیاں رکھیں یا ٹھنڈے پانی کا اسپرے کریں۔
• پیڈسٹل پنکھے کا رخ مریض کی جانب کردیں تاہم بجلی نہ ہو تو اخبار سے خود مریض کو ہوا دیں۔
اس سے ہٹ کر بھی گھر سے باہر نکلتے ہوئے پانی کی بوتل اپنے پاس رکھیں چاہے روزہ ہی کیوں نہ ہو اور طبیعت بگڑنے پر فوری پانی کا استعمال کریں کیونکہ روزے کا کفارہ ہوسکتا ہے مگر جان پھر واپس نہیں آسکتی۔
ہیٹ اسٹروک اور دیگر مسائل سے بچنے کیلئےطبی ماہرین مشورہ دیتے ہیں کہ شدید گرمی میں انتہائی ضرورت کے بغیر باہر جانے سے گریز کریں، اگر باہر جائیں تو ہلکے رنگوں والے ہلکے پھلکے کپٹرے پہنیں اور باہر جاتے وقت سرپر گیلا کپڑا رکھیں اور جہاں تک ممکن ہو سایہ دار جگہ پر رہیں، اس کے علاوہ زیادہ سے زیادہ پانی پئیں جبکہ کھانے میں گوشت کی بجائے تازہ سبزیوں اور دالوں کا استعمال کریں،تاکہ جسم میں نمی برقرار رہے اور آپ ہیٹ اسٹروک سے بچے رہیں۔

شدید گرمی کے موسم میں چند افراد زیادہ احتیاط کریں، 60 سال سے زائد عمر کے افراد، 4 سال سے کم عمر بچے، شوگر، دل کے امراض اور ہائپر ٹینشن کے مریض کمزور مدافعتی نظام اور گرمی کی شدت سے زیادہ متاثر ہوسکتے ہیں۔

Advertisements