کالی چائے کے حیرت انگیز فوائد


tea-670

کالی چائے کے حیرت انگیز فوائد

چائے، پاکستان میں اکثر افراد کا پسندیدہ ترین مشروب ہے. پاکستانی ثقافت میں اسے مرکزی اہمیت حاصل ہے۔ پاکستانی مشروبات میں یہ سب سے زیادہ استعمال ہونے والا مشروب ہے۔ پاکستان میں تقریباً 80فیصد لوگ چائے پیتے ہیں۔ ہمارے ملک میں صبح ناشتے میں، دفتر میں، مہمان کے ساتھ اور دوستوں کے ساتھ گپ شپ کے وقت کئی کئی مرتبہ چائے پینے کا معمول ہے۔

images%d8%a8%da%be%d8%a6

hwaml-com_1342281599_188

160498-looseceylontea-1376248380-845-640x480

ہمارے ملک کا خاصا سرمایہ صرف چائے کی مد میں باہر جاتا ہے۔ چائے کا کاروبار، بہت بڑا کاروبار ہے۔ اس کا کوئی سیزن بھی نہیں، پورا سال چائے چلتی ہے۔ گرمیوں میں زیادہ چائے پی جاتی ہے۔ کیونکہ دن لمبا ہوتا ہے، کئی دفعہ نوبت آ جاتی ہے۔ چائے میں کیفین کی موجودگی پینے والے کو تروتازہ کر دیتی ہے۔ چاۓ کے پودے کا اصل وطن مشرقی چین، جنوب مشرقی چین، میانمار اور آسام ، بھارت ہیں۔ پاکستانی بھارت سے زیادہ چائے پیتے ہیں، سالانہ اوسطاً فی پاکستانی ایک کلو چائے کی پتی پی جاتا ہے جب کہ بھارتی سالانہ فی کس 8 سو گرام چائے کی پتی استعمال کرتے ہیں۔چائے کی کھپت بڑھنے کے باعث درآمد میں بھی خاطر خواہ اضافہ ہوا۔ پاکستان ٹی ایسوسی ایشن کے مطابق ملک میں چائے کی طلب میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔کالی چائے حیران کن طبی فوائد کی حامل ہوتی ہے جدید تحقیق کے مطابق اس کے چند حیرت انگیز فوائد یہ ہیں:-
کالی چائے میں موجود مرکب خون روکنے والی دوا کی طرح کام کرتے ہیں اور اس کی مدد سے کھلے زخموں یا خراشوں سے خون کو بہنے سے روکا جا سکتا ہے اس کے لئے ایک ٹھنڈے اور استعمال شدہ ٹی بیگ کو نرمی سے متاثرہ جگہ پر دبائیں جس سے تکلیف اور سوجن میں کمی محسوس ہوگی
آنکھیں خشک اور خارش ہو رہی ہو تو 2 ٹی بیگز کو گرم پانی میں 10 منٹ تک ڈبو کر رکھیں باہر نکالنے پر اس میں اضافی پانی کو دبا کر نکال دیں اور پھر ٹی بیگز کو دس منٹ تک اپنی آنکھوں پر لگائے رکھیں اس سے خارش میں آرام اور سوجن میں کمی آئے گی
فلیونوئڈزسے بھرپور ہونے کے باعث کالی چائے الرجیز سے تحفظ فراہم کرتی ہے روزانہ دو، تین کپ پینا آپ کی الرجی کی تکلیف میں کمی لانے کے لئے فائدہ مند ثابت ہو سکتا ہے
کالی چائے میں ایسے اجزا ہوتے ہیں جو ٹشوز کی سوجن کم کرنے کے ساتھ مسوڑوں سے خون بہنے کو روکتے ہیں اگر آپ کے مسوڑے سوج رہے ہیں تو بھیگے ہوئے ٹی بیگز کو براہ راست ان پر لگائیں آپ چائے کو بھی ماؤتھ واش(Mouth Wash) کے طور پر استعمال کر سکتے ہیں جس سے مسوڑوں کی صحت میں بہتری آتی ہے اگر تحفظ ہو تو ہمیشہ اپنے ڈاکٹر یا دندان ساز کو چیک کروائیں ۔کالی چائے میں موجود تیزابیت آنتوں کی صفائی کرتی ہے جس سے جسم کو تمام مواد جذب کرنے میں مدد ملتی ہے اور آنتوں کی سوجن میں کمی آتی ہے بہتر فائدے کے لئے بغیر کیفین کی سیاہ چائے کو پی کر دیکھیں جس میں آپ شہد بھی ملا سکتے ہیں۔
ﺍﻣﺮﯾﮑﯽ ﻣﺤﻘﻘﯿﻦ ﻧﮯ ﺍﯾﮏ ﺗﺤﻘﯿﻖ ﻣﯿﮟ ﮐﮩﺎ ﮨﮯ ﮐﮧﭼﺎﺋﮯ ﻣﯿﮟ ﻓﻠﻮ ﺭﯾﻦ ﮐﯽ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻣﻘﺪﺍﺭ ﮨﮉﯾﻮ ﮞ ﺍﻭﺭﺩﺍﻧﺘﻮﮞ ﮐﻮ ﮐﻤﺰﻭﺭ ﮐﺮﺗﯽ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﭼﺎﺋﮯ ﭘﯿﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﺍﻓﺮﺍﺩ ﺩﺍﻧﺘﻮﮞ ﺍﻭﺭ ﮨﮉﯾﻮﮞ ﮐﯽ ﮐﻤﺰﻭﺭﯼ ﮐﺎ ﺷﮑﺎﺭ ﮨﻮ ﺳﮑﺘﮯ ﮨﯿﮟ۔ ﻣﺤﻘﻘﯿﻦ ﮐﺎ ﮐﮩﻨﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺗﺤﻘﯿﻖ ﺳﮯ ﺛﺎﺑﺖ ﮨﻮﺍ ﮨﮯ ﭼﺎﺋﮯ ﻣﯿﮟ ﭘﺎﻧﯽ ﮐﯽ ﻧﺴﺒﺖ ﺳﺘﺮ ﻓﯿﺼﺪ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻓﻠﻮ ﺭﯾﻦ ﻣﻮ ﺟﻮﺩ ﮨﻮ ﺗﺎ ﮨﮯ، ﺟﻮ ﺍﻧﺴﺎﻧﯽ ﺻﺤﺖ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﻧﻘﺼﺎﻥ ﺩﮦ ﮨﮯ۔ﻭﺍﺿﺢ ﺭﮨﮯ ﮐﮧ ﺍﺱ ﻭﻗﺖ ﭘﺎﮐﺴﺘﺎﻥ ﻣﯿﮟ ﺍﻭﺳﻄﺎ ﭼﺎﺋﮯ ﮐﯽ ﮐﮭﭙﺖ ﺳﺎﻻﻧﮧ ﺍﯾﮏ ﮐﻠﻮ ﮔﺮﺍﻡ ﻓﯽ ﮐﺲ ﺳﮯ ﺯﺍﺋﺪ ﮨﮯ۔ ﭘﺎﮐﺴﺘﺎﻥ ﭼﻮﻧﮑﮧ ﭼﺎﺋﮯ ﮐﯽ ﭘﯿﺪﺍﻭﺭ ﻣﯿﮟ ﺧﻮﺩ ﮐﻔﯿﻞ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﮯ ﺍﺱ ﻟﺌﮯ ﺩﯾﮕﺮ ﻣﻤﺎﻟﮏ ﺳﮯﺩﺭآﻣﺪ  ﮐﯽ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ۔

Advertisements