پنجاب اسمبلی کے سامنے دھماکہ، ڈی آئی جی ٹریفک سمیت 13 افراد شہید، درجنوں زخمی


c4jrwwoueaae-uv

پنجاب اسمبلی کے سامنے دہماکہ،ڈی آئی جی ٹریفک سمیت 13 افراد شہید، درجنوں زخمی

لاہور میں پنجاب اسمبلی کے سامنے دھماکے کے نتیجے میں ڈی آئی جی ٹریفک احمد مبین اور ایس ایس پی آپریشنز زاہد گوندل سمیت 13 افراد ہلاک اور 100سے زیادہ زخمی ہوگئے۔لاہور کے مال روڈ پر پنجاب اسمبلی کے سامنے ہونے والے دھماکے کے بعد پاک فوج نے پہنچ کر علاقے کا کنٹرول سنبھال لیاہے۔

c4jlniqwcaif64m

ym1l5-5j

news-1486993107-9302_large

737340-lhr-1486997236-380-640x480

a7625400466a489a80228942f8a6410f-07fa1020799043f2b0480fe490c48eff-3f9cb9169ddfa7074c0f6a706700cdd6

تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے دستے نے علاقے کو سیل کر دیاہے جبکہ سیکیورٹی فورسز کی جانب سے سرچ آپریشن بھی لانچ کر دیا گیاہے ۔عینی شاہد نے ڈیلی پاکستان آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ تھوڑی دیر بعد وزیر پنجاب کی قیادت میں وفد نے مظاہرین سے مذاکرات کرنے کیلئے آنا تھا،ہم گاڑی میں سوار ہوکر آرہے تھے دیکھتے ہی دیکھتے احتجاج کی جگہ پر دھماکہ ہوا ہے۔

c4jq34awqaet1p3

58a1b498b9349

o9ac3ofe

tyf3cgx3

58a1b498b9349

نجی ٹی وی دنیا نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیاہے کہ ڈی آئی جی ٹریفک پولیس کیپٹن (ر)مبین اور ایس ایس پی آپریشن زاہد نوازگوندل شہید۔مال روڈ پر پنجاب اسمبلی کے باہر زور دار دھماکے کے بعد آگ پھیل گئی جس کے نتیجے میں بعض گاڑیوں کو آگ لگ گئی۔

صوبائی وزیر پنجاب رانا ثناء نے بتایا ہے کہ لاہور میں مال روڈ پر چیئرنگ کراس کے مقام پر دھماکے کی ابتدائی معلومات کے مطابق دھماکا خود کش تھا تاہم اس کی نوعیت کے بارے میں مزید تحقیقات جا ری ہیں۔

جائے وقوعہ پر زخمی پکار رہے ہیں ریسکیو اہلکار زخمیوں اور لاشوں کو ہسپتالوں میں منتقل کیا جارہا ہے،اس دھماکے میں میڈیا کے اہلکار بھی زخمی ہوئے ہیں،درجنوں افراد کے شہید ہونے کا خدشہ ہے۔

c4jgfqwwmaasfro

نیشنل کاﺅنٹر ٹیررازم اتھارٹی کی جانب سے چار روز قبل ممکنہ دہشتگردی کی کارروائی کی انفارمیشن پنجاب حکومت کو جاری کر دی گئی تھی۔
تفصیلات کے مطابق نیکٹا کی جانب محکمہ داخلہ پنجاب کو مراسلہ جاری کر دیا گیا تھا جس میں بتایا گیا تھا کہ دہشتگرد لاہور میں ممکنہ طور پر دہشتگردی کی کارروائی کرسکتے ہیں اس لیے تمام اہم عمارتوں اور سکولوں کی سیکیورٹی بڑھا دی جائے ۔انتہائی اہم معلومات ہونے کے باوجود بھی لاہور دھماکے سے گونج اٹھا ،چیئرنگ کراس پر دھماکے میں 10افراد کی شہادت کی اطلاعات ہیں۔

چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گرد بزدلانہ کارروائیوں سے ہمارے حوصلے پست نہیں کر سکتے، جبکہ ایسے واقعات سے دہشت گردی کے خلاف قوم کا عزم اور مضبوط ہوجاتا ہے۔

لاہور میں مال روڈ پر پنجاب اسمبلی کے قریب دھماکے کی ذمہ داری کالعد م جماعت احرار نے قبول کر لی ہے جس میں اب تک 13افراد شہید ہو گئے ہیں ۔
نجی ٹی وی جیونیوز کے  مطابق کالعد م جماعت احرار کے ترجمان نے لاہور دھماکے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے بیان جاری کر دیاہے۔جماعت احرار طالبان سے علیحدہ ہونے والا انتہا پسندوں کا دھڑا ہے۔

خودکش حملے اور بم دھماکے اسلام میں جائز نہیں یہ اقدام کفر ہے. خودکش حملے اور بم دھماکے اسلام میں جائز نہیں یہ اقدام کفر ہے. اسلام میں خود کش حملے حرام، قتل شرک کے بعد سب سے بڑا گناہ اوربدترین جرم ہے۔

اسلام ایک بے گناہ فرد کے قتل کو پوری انسانیت کا قتل قرار دیتا ہے۔ جماعت احرار و طالبان اور دوسری کالعدم  دہشت گرد تنظیمیں گولی کے زور پر اپنا سیاسی ایجنڈا پاکستان پر مسلط کرنا چاہتے ہیں ۔ 

جماعت احرار و پاکستانی طالبان جان لیں کہ وہ اللہ کی بے گناہ مخلوق کا قتل عام کر کے اللہ کے عذاب کو دعوت دے رہے ہیں اور اللہ اور اس کے پیارے رسول(ص) کی ناراضگی کا سبب بن رہے ہیں. پاکستانی طالبان کو سمجھنا چاہیے کہ وہ خودکش حملے  اور بم دہماکےکر کے غیرشرعی اور حرام فعل کا ارتکاب کر رہے ہیں۔

کسی بھی مسلم حکومت کے خلاف علم جنگ بلند کرتے ہوئے ہتھیار اٹھانا اور مسلح جدوجہد کرنا، خواہ حکومت کیسی ہی کیوں نہ ہو اسلامی تعلیمات میں اجازت نہیں۔ یہ فتنہ پروری اور خانہ جنگی ہے،اسے شرعی لحاظ سے محاربت و بغاوت، اجتماعی قتل انسانیت اور فساد فی الارض قرار دیا گیا ہے۔علمائے اسلام ایسے جہاد کو’’ فساد فی الارض ‘‘اور دہشت گردی قرار دیتے ہیں ۔ایسا جہاد فی سبیل اللہ کی بجائے جہاد فی سبیل غیر اللہ ہوتا ہے  ۔ طالبا ن کا طرز عمل جہاد فی سبیل کے اسلامی اصولوں اور شرائط کے منافی ہے۔

اس قسم کی صورت حال کو قرآن مجید میں حرابہ سے تعبیر کیا گیا ہے۔ یہ انسانی معاشرے کے خلاف ایک سنگین جرم ہے انتہا پسند و دہشت گرد پاکستان کا امن تباہ کرنے اور اپنا ملک تباہ کرنے اور اپنے لوگوں کو مارنے پر تلے ہوئے ہیں۔ جماعت احرار و طالبان اپنے اقتدار کی جنگ لڑ رہے ہیں اور جہاد نہ کر رہے ہیں۔

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s