لاہور پھر سوگوار


_94631431_mediaitem94631430

لاہور پھر سوگوار

زندہ دلان لاہور سوگ کے عالم میں، لاہور کا امن تار تار کرنے پر ہر دل اداس ہر آنکھ اشکبار ہے ۔آج لاہور سوگوار ہےکیونکہ کل  پھر مال روڈ پر دہشتگردی کا افسوسناک واقعہ پیش آیا. لاہور میں پھر خون کی ہولی کھیلی گئی اور درندہ صفت ، سفاک دہشتگردوں نے مال روڈ پر چیرنگ کراس چوک کو انسانی لہو سے سرخ کردیا گیا اور اس المناک واقع کے غم میں  لاہور اور پورا پاکستان سوگوار ہو گیا، ملک کے 13 سپوتوں سمیت2 فرض شناس آفیسرز شہید ہوچکے ہیں اور 100 سے زیادہ زخمی ہوئے ہیں۔ گزشتہ روڈ مال روڈ پر خودکش حملے میں شہید پولیس اہلکاروں کی نماز جنازہ ادا کردی گئی ہے جب کہ شہر کی فضا بدستور سوگوار ہے۔

c4jlniqwcaif64m

pakistan-lahore_647_021317083316

لاہور دھماکے کے ایک روز بعد منگل کو ملک بھر میں اور خاص کر لاہور میں فضا سوگوار ہے، سرکاری عمارتوں پر پرچم سرنگوں ہیں۔ تاجر تنظیموں نے بھی آج مارکیٹ اور کاروباری مراکز بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

1104031402-1

c4mw7mww8aa0ypr

1104031398-1

لاہور ، پاکستان کا دوسرا بڑا شہر ہو نے کی وجہ سےملک کی  ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے نہ جا نے ایسی کون سی خطا ئیں ہم سے سرزد ہو گئیں ہیں کہ اللہ تعا لیٰ ہمیں ایسے کڑے امتحا نوں میں ڈال رہا ہے وہ شہر جو کبھی اپنی روشنی اور رونقوں کی بنیا د پر جا نا اور پہچا نا جا تا ہے آ ج لہو لہان نظر آ تا ہے آ ئے دن ایسے ایسے واقعے سننے کو ملتے ہیں کہ روح تک کا نپ اٹھتی ہے.  لاہور کے سانحے پر ہر دل غمگین اور ہر آنکھ اشکبار ہے۔ انسانی خون کے پیاسے وحشی، بھیڑیے، جنونی کب تک دن دہاڑے معصوم و بے گناہوں کا خون بہاتے رہیں گے اور کب تک پاکستانی دھرتی ملک کے سپوتوں کے خون سے سرخ ہوتی رہے گی؟

c4mgasswiae8mbu

c4lnh68ukaak6hn

737471-lahoreblast-1487004710-960-640x480-1487008481

fjaazl_n

آجکل حالات بدترین ہو چکے ہیں، مائیں اپنے بچوں کو باہر بھیجتے ہوئے ڈرتی ہیں، بچے چھوٹے ہوں یا بڑے، اسکول جاتے ہوں یا دفاتر، ہر لمحہ دھڑکا سا لگا رہتا ہے کہ نجانے کیا ہو؟ ٹائر پھٹنے کی آواز ہو یا پٹاخے پھٹنے کی، یا بھاری سامان نیچے گرنے کی، بس یوں ہی لگتا ہے کہ کہیں دھماکا ہوا ہے، فائرنگ ہوئی ہے، کسی کے ہاتھوں میں اسلحہ دیکھ کر یا فائرنگ کی آواز سن کر لوگ دوڑنا بھاگنا شروع کر دیتے ہیں، بھگدڑ مچ جاتی ہے، ایسا ہی حال سڑکوں پر ہوتا ہے، ادھر فائرنگ کی آوازیں، ادھر گاڑیاں مختلف اور غلط راستوں پر دوڑنے لگیں، جائے پناہ کی تلاش میں ہر شخص سرگرداں نظر آتا ہے۔

a7625400466a489a80228942f8a6410f-07fa1020799043f2b0480fe490c48eff-3f9cb9169ddfa7074c0f6a706700cdd6

دہشت گرد قدم قدم پر موجود ہیں، کب موت کے گھاٹ اتار دیں، کچھ بھی ہو سکتا ہے، اتنے سنگین حالات میں اب پرواہ ہے تو اس کی کہ زندگی بچالی جائے۔

05232899

lahore-blast-suicide-bomber-identified-rana-sanaullah-d9a10700beaa81d2b8de989287bafb76

58a1ced947939

لاہور ، پاکستان کا دوسرا بڑا شہر ہو نے کی وجہ سےملک کی  ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے نہ جا نے ایسی کون سی خطا ئیں ہم سے سرزد ہو گئیں ہیں کہ اللہ تعا لیٰ ہمیں ایسے کڑے امتحا نوں میں ڈال رہا ہے وہ شہر جو کبھی اپنی روشنی اور رونقوں کی بنیا د پر جا نا اور پہچا نا جا تا ہے آ ج لہو لہان نظر آ تا ہے آ ئے دن ایسے ایسے واقعے سننے کو ملتے ہیں کہ روح تک کا نپ اٹھتی ہے.  لاہور کے سانحے پر ہر دل غمگین اور ہر آنکھ اشکبار ہے۔ انسانی خون کے پیاسے وحشی، بھیڑیے، جنونی کب تک دن دہاڑے معصوم و بے گناہوں کا خون بہاتے رہیں گے اور کب تک پاکستانی دھرتی ملک کے سپوتوں کے خون سے سرخ ہوتی رہے گی؟

c4jmwifwmaqs5pl

آجکل حالات بدترین ہو چکے ہیں، مائیں اپنے بچوں کو باہر بھیجتے ہوئے ڈرتی ہیں، بچے چھوٹے ہوں یا بڑے، اسکول جاتے ہوں یا دفاتر، ہر لمحہ دھڑکا سا لگا رہتا ہے کہ نجانے کیا ہو؟ ٹائر پھٹنے کی آواز ہو یا پٹاخے پھٹنے کی، یا بھاری سامان نیچے گرنے کی، بس یوں ہی لگتا ہے کہ کہیں دھماکا ہوا ہے، فائرنگ ہوئی ہے، کسی کے ہاتھوں میں اسلحہ دیکھ کر یا فائرنگ کی آواز سن کر لوگ دوڑنا بھاگنا شروع کر دیتے ہیں، بھگدڑ مچ جاتی ہے، ایسا ہی حال سڑکوں پر ہوتا ہے، ادھر فائرنگ کی آوازیں، ادھر گاڑیاں مختلف اور غلط راستوں پر دوڑنے لگیں، جائے پناہ کی تلاش میں ہر شخص سرگرداں نظر آتا ہے۔

_94636026_whatsappimage2017-02-14at2-00-45am

news-1486994636-3054

دہشت گرد قدم قدم پر موجود ہیں، کب موت کے گھاٹ اتار دیں، کچھ بھی ہو سکتا ہے، اتنے سنگین حالات میں اب پرواہ ہے تو اس کی کہ زندگی بچالی جائے۔

news-1487007377-8069_large

لاہور میں ہونے والے خود کش حملے کی ذمہ داری کالعدم تحریک طالبان کے منحرف ہونے والے دھڑے ’’جماعت الاحرار ‘‘ نے قبول کر لی ہے ۔

وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں کے مکمل خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے جب کہ معصوم پاکستانیوں کے خون سے ہاتھ رنگنے والے اپنے عبرتناک انجام سے بچ نہیں سکتے۔وزیر اعلیٰ پنجاب نے زخمی پولیس اہلکاروں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کے مکمل خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے، یہ دہشت گردی کا بدترین واقعہ ہے، بزدل اور درندہ صفت دشمن نے سفاکانہ کارروائی کی ہے، معصوم پاکستانیوں کے خون سے ہاتھ رنگنے والے اپنے عبرتناک انجام سے بچ نہیں سکتے اور قوم اس کا بدلہ ضرور لے گی۔

اس وقت پاکستا ن ایک انتہائی تشویسناک صورتحال سے دوچار ہے۔طالبان دہشتگردوں اور ان کے ساتھیوں نے ہمارے پیارے پاکستان کو جہنم بنا دیا ہے،50 ہزار کے قریب معصوم اور بے گناہ لوگ اپنی جان سے گئے،پاکستان کی اقتصادیات آخری ہچکیاں لے رہی ہے اور داخلی امن و امان کی صورتحال دگرگوں ہے۔

خودکش حملوں ، انتہا پسندی اور دہشت گردی جیسی قبیح  برائیوں کی اسلام میں کوئی گنجائش نہیں۔خودکش حملے اور بم دھماکے اسلام میں حرام ہیں۔ خود کش حملوں کا ارتکاب کرنا دہشتگردی ہے ،جہاد نہ ہے،جہاد تو اللہ کی راہ میں ،اللہ تعالی کی خشنودی کے لئےکیا جاتا ہے۔

دہشت گردوں نے بزدلانہ کارروائی کرتے ہوئے آسان ہدف کو نشانہ بنایا ہے  تاہم پاکستانی عوام انہیں کیفرکردار تک پہنچائیں گے اور انہیں کہیں چھپنے کی جگہ نہیں دیں گے۔ پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں نے اپنا کام شروع کردیا اور واقعہ میں ملوث ملزمان کو جلد انصاف کےکٹہرے میں لاکر کھڑا کریں گے۔ دہشتگردی کے خاتمہ پر ملک میں امن و امان بحال ہوگا اور ترقی و خوشحالی کا ایک نیا باب شروع ہوگا۔

دہشتگرد جان لیں کہ وہ اللہ کی مخلوق کا بے دردی سے قتل عام کر کے اللہ کے عذاب کو دعوت دے رہے ہیں اور اللہ اور اس کے پیارے رسول صلم کی ناراضگی کا سبب بن رہے ہیں. حدیث رسول اللہ میں ہے کہ انسانی جان کی حرمت خانہ کعبہ کی حرمت سے زیادہ بیان کی گئی ہے۔ اسلام برداشت اور صبر و تحمل کا مذہب ہے،اس میں دہشتگردی کی کوئی گنجائش نہیں ہے، بلکہ اس میں تو کسی بھی انسان کے ناحق قتل کو پوری انسانیت کا قتل قرار دیا گیا ہے۔

دہشتگردگروپس طاقت کے بل بوتے پر اپنے سیاسی و مذہبی عقائد، پاکستان کے عوام پر زبردستی مسلط کرنے کے درپے ہیں ہیں جو اسلام کی روح کے خلاف ہے۔. اسلام ایک امن پسند مذہب ہے جو کسی بربریت و بدامنی کی ہرگز اجازت نہیں دیتا۔

لاہور میں دہشتگردی کاواقعہ افسوسنا ک اوردردناک ہے پوری قوم سوگ میں ڈوب گئی ہے ،دہشتگردی کا مقصدملکی معیشت کومفلوج اورملک کوعدم استحکام کاشکار کرناہے۔ پاکستان دہشتگردی کے چیلنج سے نبرد آزما ہے۔معصوم لوگوں کو نشانہ بنانا قابل مذمت ہے۔ معصوم لوگوں کومارنے والے دہشت گرد مسلمان  و انسان نہیں ہوسکتے ہم سب کو مل جل کر حکومت کی  بھرپورمدد کرنی چاہئیے تاکہ حکومت ایک مربوط حکمت عملی سے دہشت گردوں کے گردوں کاقلع قمع کرے۔

اس وقت پاکستا ن ایک انتہائی تشویسناک صورتحال سے دوچار ہے۔طالبان دہشتگردوں اور ان کے ساتھیوں نے ہمارے پیارے پاکستان کو جہنم بنا دیا ہے،50 ہزار کے قریب معصوم اور بے گناہ لوگ اپنی جان سے گئے،پاکستان کی اقتصادیات آخری ہچکیاں لے رہی ہے اور داخلی امن و امان کی صورتحال دگرگوں ہے۔

خودکش حملوں ، انتہا پسندی اور دہشت گردی جیسی قبیح  برائیوں کی اسلام میں کوئی گنجائش نہیں۔خودکش حملے اور بم دھماکے اسلام میں حرام ہیں۔ خود کش حملوں کا ارتکاب کرنا دہشتگردی ہے ،جہاد نہ ہے،جہاد تو اللہ کی راہ میں ،اللہ تعالی کی خشنودی کے لئےکیا جاتا ہے۔

دہشت گردوں نے بزدلانہ کارروائی کرتے ہوئے آسان ہدف کو نشانہ بنایا ہے  تاہم پاکستانی عوام انہیں کیفرکردار تک پہنچائیں گے اور انہیں کہیں چھپنے کی جگہ نہیں دیں گے۔ پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں نے اپنا کام شروع کردیا اور واقعہ میں ملوث ملزمان کو جلد انصاف کےکٹہرے میں لاکر کھڑا کریں گے۔ دہشتگردی کے خاتمہ پر ملک میں امن و امان بحال ہوگا اور ترقی و خوشحالی کا ایک نیا باب شروع ہوگا۔

دہشتگرد جان لیں کہ وہ اللہ کی مخلوق کا بے دردی سے قتل عام کر کے اللہ کے عذاب کو دعوت دے رہے ہیں اور اللہ اور اس کے پیارے رسول صلم کی ناراضگی کا سبب بن رہے ہیں. حدیث رسول اللہ میں ہے کہ انسانی جان کی حرمت خانہ کعبہ کی حرمت سے زیادہ بیان کی گئی ہے۔ اسلام برداشت اور صبر و تحمل کا مذہب ہے،اس میں دہشتگردی کی کوئی گنجائش نہیں ہے، بلکہ اس میں تو کسی بھی انسان کے ناحق قتل کو پوری انسانیت کا قتل قرار دیا گیا ہے۔

دہشتگردگروپس طاقت کے بل بوتے پر اپنے سیاسی و مذہبی عقائد، پاکستان کے عوام پر زبردستی مسلط کرنے کے درپے ہیں ہیں جو اسلام کی روح کے خلاف ہے۔. اسلام ایک امن پسند مذہب ہے جو کسی بربریت و بدامنی کی ہرگز اجازت نہیں دیتا۔

لاہور میں دہشتگردی کاواقعہ افسوسنا ک اوردردناک ہے پوری قوم سوگ میں ڈوب گئی ہے ،دہشتگردی کا مقصدملکی معیشت کومفلوج اورملک کوعدم استحکام کاشکار کرناہے۔ پاکستان دہشتگردی کے چیلنج سے نبرد آزما ہے۔معصوم لوگوں کو نشانہ بنانا قابل مذمت ہے۔ معصوم لوگوں کومارنے والے دہشت گرد مسلمان  و انسان نہیں ہوسکتے ہم سب کو مل جل کر حکومت کی  بھرپورمدد کرنی چاہئیے تاکہ حکومت ایک مربوط حکمت عملی سے دہشت گردوں کے گردوں کاقلع قمع کرے۔

Advertisements