کابل میں خودکش حملے ، 43افراد ہلاک، 100زخمی


kabul-attacks-toll

کابل میں خودکش حملے ، 43افراد ہلاک، 100زخمی

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں پولیس سٹیشن اور انٹیلی جنس کے دفتر پر خودکش حملوں  اور فائرنگ کے واقعات میں 43افراد ہلاک اور 100 زخمی ہوگئے ہیں۔

news-1488387000-5886_large

وزارت داخلہ کے ترجمان نے بتایا ہے کہ خودکش حملہ آور نے بارود سے بھری کار پولیس سٹیشن کے گیٹ کے قریب دھماکے سے اڑا دی۔نائب ترجمان وزارت داخلہ نجیب دانش نے بتایا کہ دھماکے کے بعد پولیس اور حملہ آوروں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا۔دوسرے حملے میں ایک پیدل خودکش حملہ آور نے  مشرقی کابل میں واقع انٹیلی جنس کے دفتر کے باہر  دھماکے سے خود کو اڑا لیا۔ مرنے والوں میں زیادہ تر سویلین ہیں۔

afghanistan_08856

index

hospital-attacks-personnel-injured-afghan-security-afghanistan_1f9e143a-fe8a-11e6-abb0-ce03674c2ba4

افغانستان کے صدر اشرف غنی نے کابل پولیس سٹیشن اور انٹیلی جنس آفس میں ہونے والے خود کش حملوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گرد ان حملوں کے ذریعے ایک بار پھر کابل میں دہشت اور خوف کی فضا پیدا کرنے کی کوشش کی ہے ۔  اگرچہ طالبان نے ذمہ داری قبول کر لی ہے مگریہ حقانی نیٹ ورک کا کام لگتا ہے۔

خودکش حملے اور بم دھماکے اسلام میں جائز نہیں یہ اقدام کفر ہے. اسلام ایک بے گناہ فرد کے قتل کو پوری انسانیت کا قتل قرار دیتا ہے۔ ہیںمعصوم شہریوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنانا، قتل و غارت کرنا، خود کش حملوں کا ارتکاب کرنا اورپرائیوٹ، ملکی و قومی املاک کو نقصان پہنچانا،  مسجدوں پر حملے کرنا اور نمازیوں کو شہید کرنا ، عورتوں اور بچوں کو شہید کرناخلاف شریعہ ہے۔

کسی بھی مسلم حکومت کے خلاف علم جنگ بلند کرتے ہوئے ہتھیار اٹھانا اور مسلح جدوجہد کرنا، خواہ حکومت کیسی ہی کیوں نہ ہو اسلامی تعلیمات میں اجازت نہیں۔ یہ فتنہ پروری اور خانہ جنگی ہے،اسے شرعی لحاظ سے محاربت و بغاوت، اجتماعی قتل انسانیت اور فساد فی الارض قرار دیا گیا ہے۔

یہ جہاد نہ ہے کیونکہ علمائے اسلام ایسے جہاد کو’’ فساد فی الارض ‘‘اور دہشت گردی قرار دیتے ہیں  ایسا.جہاد فی سبیل اللہ کی بجائے جہاد فی سبیل غیر اللہ ہے کیونکہ ایسا جہاد اقتدار کے لئے ہے اور خدا کے لئے اور اللہ کے راستہ کے لئے نہ ہے۔
انتہا پسند و دہشت گرد افغانستان کا امن تباہ کرنے اور اپنا ملک تباہ کرنے اور اپنے لوگوں کو مارنے پر تلے ہوئے ہیں۔

Advertisements