پشاور زرعی ڈائر یکٹوریٹ پر طالبان دہشت گردوں کا حملہ ،11افراد شہید ،34زخمی


پشاور زرعی ڈائر یکٹوریٹ پر طالبان دہشت گردوں کا حملہ ،11افراد شہید ،34زخمی

عید میلادالنبی کے موقع پربرقعہ پوش  دہشت گردوں نے پشاور زرعی ڈائریکٹوریٹ پر حملہ کردیا جس کے نتیجے میں11افراد شہید جبکہ پاک فوج کے 2جوانوں سمیت34افراد زخمی ہوگئے ۔پاک فوج نے کامیاب آپریشن کرتے ہوئے تمام دہشت گردوں کو ہلاک کردیا ۔صبح 8بجکر 15منٹ کے قریب نامعلوم نقاب دہشت گرد فائرنگ کے بعد ڈائریکٹوریٹ کی عمارت کے اندر جاگھسے جہاںانہوں نے نہتے لوگوں پر فائرنگ کردی ۔انتظامیہ کےمطابق حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں6 اور  خیر ٹیچنگ ہسپتال میں 3 لاشیں لائی گئیں۔

سیکیورٹی فورسز اور پاک فوج کے دستوں نے موقع پر پہنچ کر دہشت گردوں کے خلاف کارروائی شروع کی تو ہاسٹل کے اندر سے ایک زوردار دھماکہ بھی سنا گیا۔سیکیورٹی فورسز کا حملہ آوروں کیساتھ فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا جبکہ اس دوران گن شپ ہیلی کاپٹروں سے آپریشن کی فضائی نگرانی بھی کی ۔ کچھ دیر بعد پاک فو ج کے ترجمان ادارے نے خوشخبری سناتے ہوئے بتا یا کہ سیکیورٹی فورسز نے تمام دہشت گردوں کو ہلاک کردیا ہے ۔انہوں نے بتا یا کہ پشاور زرعی ڈائریکٹوریٹ پر 4دہشت گردوں نے حملہ کیا جنہیں پاک فوج کے جوانوں نے آپریشن کر کے ہلاک کردیا ۔تمام دہشت گردوں نے خود کش جیکٹس پہن رکھی تھیں اور وہ زیادہ سے زیادہ نقصان پہنچانے کے ارادے سے پشاور زرعی ڈائر یکٹوریٹ میں داخل ہوئے تھے ۔آپریشن کے دوران پاک فوج کے بھی دو جوان زخمی ہوئے جنہیں ہسپتال منتقل کردیا گیا ۔

نجی خبر رساں ادارے ”ایکسپریس ٹریبیون“ کے مطابق کالعدم تحریک طالبان پاکستان نے حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے

خودکش حملے،دہشت گردی اور بم دھماکے اسلام میں جائز نہیں یہ اقدام کفر ہے. جہاد وقتال فتنہ ختم کرنے کیلئےہوتا ہے ناکہ مسلمانوں میں فتنہ پیدا کرنے کیلئے۔طالبان قرآن کی زبان میں مسلسل فساد فی الارض کے مرتکب ہو رہے ہیں۔ اسلام امن اور محبت کا دین ہے۔ دہشتگرد تنظیمیں جہالت اور گمراہی کےر استہ پر ہیں۔ اسلام ایک بے گناہ کے قتل کو پوری انسانیت کے قتل سے تعبیر کرتا ہے۔طالبان مسلمانوں اور اسلام کی دشمن ہے اس کی اسلام اور مسلم کش سرگرمیوں کی وجہ سے مسلمانوں اور اسلام کا بہت نقصان ہوا ہے۔دہشت گرد قومی وحدت کیلیے سب سے بڑاخطرہ ہیں۔طالبان ایک رستا ہوا ناسور ہیں اورپاکستان کی ترقی اور خوشحالی کے لئے اس ناسور کا خاتمہ ہونا ضروری ہے۔#جہاد کے نام پر بیگناہوں کا خون بہانے والے دہشتگرد ہیں۔

Advertisements