یوم آزادی پاکستان


یوم آزادی پاکستان

پاکستان کا 72 واں جشن آزادی شایان شان طریقے سے منانے کیلئے زبردست تیاریاں اپنے عروج پر پہنچ گئیں، شہرکے گلی کوچوں، محلوں، شاہراہوں،عمارتوں اور دیگر مقامات کوخوبصورتی سے سجایا جارہا ہے،جشن آزادی کی تیاریوں کے حوالے سے بچوں، نوجوانوں اور خواتین میں زبردست جوش و خروش پایا جاتا ہے۔

آزادی کے جشن کو پہلے سے زیادہ شاندار انداز سے منانے کے لئے لوگوں نے ماہ اگست کا آغاز ہوتے ہی جشن آزادی منانے کے لئے خریداری شروع کر دی ،لوگوں کی بڑی تعداد جھنڈے، جھنڈیاں، بیجز، سبز رنگ کی شرٹس اور دیگر چیزیں خریدنے میں مصروف ہیں جبکہ بازاروں میں شہریوں کا رش د کھائی دینے لگا۔کراچی، لاہور، کوئٹہ اور پشاور میں بھی بازاروں میں ہر طرف سبز رنگ ہی نمایاں ہے اور لوگ سبز ہلالی پرچم، جھنڈیاں اور دیگر اشیا خریدنے میں مصروف ہیں۔بچے ہوں یا بڑے ہر کوئی وطن عزیز کی آزادی کے جشن کو خوب سے خوب تر منانے کے لئے خریداری میں مصروف ہے۔

14اگست 1947 کو اللہ تعالیٰ نے دو قومی نظریہ کی بنیاد اور قائد اعطم محمد علی جناح کی دن رات کی کوششوں پر  پاکستان کا تحفہ مسلمانان ہند کو عطا کیا اس کی حفاظت ہمارے ایمان کا حصہ ہے شاعر نے اسی سلسلے میں کہا تھا اورکیا خوب کہا ہی:
ہم لائے ہیں طوفان سے کشتی نکال کے
اس ملک کو رکھنا میرے بچو سنبھال کے
ہمار ے آباو اجداد نے اپنے بزرگوں کی قبروں کو چھوڑا، ہزاروں سالوں سے جن علاقوں میں رہ رہے تھا اُن علاقوں کو چھوڑا اور پاکستان کی مہم میں حصہ لیا. پورا ہندوستان ان نعروں سے گونج رہا تھا۔’’بن کے رہے گاپاکستان‘‘…..’’لے کے رہیں گے پاکستان‘‘…..’’ پاکستان کامطلب کیا ‘‘لا الہ الا اللہ

اس مرتبہ یوم آزادی ‘یوم یکجہتی کشمیر’ کے طور پر منایا جارہا ہے۔ہر پاکستانی یوم آزادی کے موقع پر قومی پرچم لہرانے کے ساتھ ساتھ کشمیر کا پرچم بھی لہرائے۔

سرکاری طور پر یوم آزادی انتہائی شاندار طریقے سے مناتے ہوئے اعلی عہدہ دار اپنی حکومت کی کامیابیوں اور بہترین حکمت عملیوں کا تذکرہ کرتے ہوئے اپنے عوام سے یہ عہد کرتے ہیں کہ ہم اپنے تن من دھن کی بازی لگا کر بھی اس وطن عزیز کو ترقی کی راہ پر گامزن رکھیں گے اور ہمیشہ اپنے رہنما قائداعظم  کے قول  ، ایمان ،اتحاد اور تنظیم” کی پاسداری کریں گے۔