زمرہ جات کے محفوظات: Uncategorized

عید الاضحی مبارک


تمام دوستوں کو عید الاضحی مبارک ہو۔ تمام دوستوں سے گزارش ہے کہ عید کی خوشیان مناتے ہوتے اپنے کم خوش نصیب دوستوں ،رشتہ داروں اور محلے داروں کو نہ بھولئیے گا اور انہیں بھی عید کی خوشیوں میں شریک کریں۔

Advertisements

کالعدم تحریک طالبان کا سربراہ ملا فضل اللہ مارا گیا


news-1529059039-6993

افغان وزارت دفاع نے کالعدم تحریک طالبان کے سربراہ ملا فضل اللہ کی امریکی ڈرون حملے میں ہلاکت کی تصدیق کردی۔

افغان وزارت دفاع کے ترجمان محمد ردمنیش نے کالعدم تحریک طالبان کے سربراہ ملا فضل اللہ کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ افغان صوبے کنڑ میں امریکی فوجی کارروائی میں ملا فضل اللہ مارا گیا۔دوسری جانب ترجمان امریکی فوج نے بھی ملا فضل اللہ کی ہلاکت کی تصدیق کی۔

کالعدم تحریک طالبان کا سربراہ ملا فضل اللہ مارا گیا پڑھنا جاری رکھیں

ؑعید مبارک


images257آواز پاکستان بلاگ کی طرف سے تمام دوستو کو عید سعید کی دلی مبارک ہو

کابل: افغان علماء کے اجتماع پر خودکش حملہ، 7 جاں بحق


کابل: افغان علماء کے اجتماع پر خودکش حملہ، 7 جاں بحق
افغانستان کے دارالحکومت کابل میں دہشت گردی کے خلاف فتویٰ دینے کے لیے جمع ہونے والے علماء کے اجتماع پر خودکش دھماکے کے نتیجے میں 7 افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے۔
افغان نشریاتی ادارے طلوع نیوز کی رپورٹ کے مطابق کابل پولیس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ یہ دھماکا خود کش تھا جو علماء کونسل کے اجلاس کے اختتام کے بعد اس وقت ہوا جب علماء اجتماع گاہ سے باہر آرہے تھے۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ حملہ آور نے خود کو لوئل جرگہ کے اجتماع کے ٹینٹ سے باہر دھماکہ خیز مواد سے اڑایا، جبکہ اجتماع گاہ میں 2 ہزار سے زائر علماء موجود تھے۔
افغان وزارتِ داخلہ کے ترجمان حشمت استینکزئی کا کہنا ہے کہ ابتدائی معلومات کے مطابق اب تک 7 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں، لیکن یہ بھی اطلاعات موصول ہو رہی ہیں کہ اس دھماکے میں جاں بحق افراد کی تعداد 12 ہے۔
طلوع نیوز کی رپورٹ کے مطابق دھماکے سے قبل علماء نے افغانستان میں جاری شورش کے حوالے سے فتویٰ دیتے ہوئے اس لڑائی کو غیر اسلامی اور شریعت کے منافی قرار دیا۔
علماء کے فتوے میں کہا گیا کہ افغانستان میں کسی بھی طرح کی جنگ غیر اسلامی عمل ہے اور یہ مسلمانوں کے قتلِ عام کے سوا کچھ نہیں ہے۔
افغانستان میں خودکش حملے ہوتے رہتے ہیں جن میں بڑی تعداد میں انسانی جانوں کا ضیاع ہوتا ہے، جن کی شدید الفاظ میں مذمت بھی کی جاتی ہے لیکن عسکریت پسندوں کا ماننا ہے کہ خودکش حملے ان کے لیے ایک موثر ہتھیار ہیں۔
افغانستان کے علماء نے فتویٰ دیا کہ خودکش حملے معصوم لوگوں کو قتل کرنے کے لیے بم دھماکے، عسکریت پسندی، کرپشن، چوری، اغوا سمیت کسی بھی طرح کی ہنگامہ آرائی اسلام میں گناہ کبیرہ ہے اور یہ اللہ تعالیٰ کے احکامات کے منافی ہے۔
علمائے کرام کا یہ بھی کہنا تھا کہ مسلمانوں کا قتلِ عام حرام ہے اور یہ ایک غیر قانونی عمل بھی ہے۔
دریں اثنا افغانستان کے علماء نے ایک مرتبہ پھر طالبان سے مطالبہ کیا کہ وہ ملک میں امن کے لیے حکومت کی غیرمشروط پیشکش کو قبول کر لیں۔
انہوں نے امید ظاہر کی تھی کہ افغانستان میں مزید قتل عام کو روکنے کے لیے طالبان حکومتی پیشکش کا مثبت جواب دیں گے۔
https://www.dawnnews.tv/news/1079758/
داعش کے خودکش حملے ،دہشتگردی اور بم دھماکے اسلام میں جائز نہیں یہ اقدام کفر ہے. اسلام ایک بے گناہ فرد کے قتل کو پوری انسانیت کا قتل قرار دیتا .معصوم شہریوں کو دہشت گردی کا نشانہ بناناخودکش حملے کرنا،قتل و غارت کرنا خلاف شریعہ ہے۔ اسلام میں خودکشی حرام ہے۔علمائے اسلام ایسے جہاد کوفی سبیل اللہ کی بجائے جہاد فی سبیل غیر اللہ کہتے ہیں۔اسلام ایک امن پسند مذہب ہے جو کسی بربریت و بدامنی کی ہرگز اجازت نہ.یں داعش خوارج قاتلوں ،جنونی ،انسانیت کے قاتل اور ٹھگوں کا گروہ ہے جو اسلام کی کوئی خدمت نہ کر رہاہے بلکہ مسلمانوں اور اسلام کی بدنامی کا باعث ہے اور مسلمان حکومتوں کو عدم استحکام میں مبتلا کر رہا ہے۔ داعش کے مظالم کے سامنے ہلاکو اور چنگیز خان کے مظالم ہیچ ہیں۔
اسلامی شریعہ کے مطابق بے گناہ لوگوں، عورتوں اور بچوں کو جنگ کا ایندہن نہ بنایا جا سکتا ہے اور نہ ہی انہوں جنگ کے دوران قتل کیا جا سکتا ہے۔ اسلام امن اور سلامتی کا دین ہے اور دہشتگرد اسلا م اور امن کے دشمن ہیں۔ دہشتگرد تنظیمیں جہالت اور گمراہی کےر استہ پر ہیں۔جہاد کے نام پر بے گناہوں کا خون بہانے والے دہشتگرد ہیں۔یہ دہشتگرد اسلام کو بدنام اور امت مسلمہ کو کمزور کر رہے ہیں۔

کوئٹہ میں داعش کی فائرنگ، چار مسیحی بشمول ایک خاتون ہلاک


کوئٹہ میں  داعش کی فائرنگ، چار مسیحی بشمول ایک خاتون  ہلاک

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں فائرنگ کے ایک واقعے میں مسیحی برادری سے تعلق رکھنے والے چار افراد کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔ہلاک ہونے والوں میں ایک خاتون بھی شامل ہیں جبکہ اس واقعے میں ایک بچی زخمی ہوئی۔یہ واقعہ سوموار کی شام ارباب کرم خان روڈ سے متصل شاہ زمان روڈ پر پیش آیا۔

کوئٹہ میں داعش کی فائرنگ، چار مسیحی بشمول ایک خاتون ہلاک پڑھنا جاری رکھیں

پارا چناردھماکہ میں 24افراد شہید، سے55 زائد زخمی


پارا چناردھماکہ میں 24افراد شہید، سے55 زائد زخمی

وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقے (فاٹا) کی کرم ایجنسی میں دھماکے کے نتیجے میں 24بے گناہ افراد ہلاک جبکہ 55 سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔شہر کے وسط میں نور مارکیٹ کے قریب واقع مرکزی امام بارگاہ کےدروازے پر بارود سے بھری گاڑی سے حملہ کیا گیا ، دھماکے کی جگہ سے مارٹر کا ٹکرا بھی ملا ہے ۔ہسپتال ذرائع نے دھماکے کے نتیجے میں 24 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کی جبکہ پولیٹیکل انتظامیہ کے مطابق 55 سے زائد افراد زخمی ہوئے۔

پارا چناردھماکہ میں 24افراد شہید، سے55 زائد زخمی پڑھنا جاری رکھیں

مہمند ایجنسی میں خود کش دھماکہ ،3خاصہ دار فورس کے اہلکار سمیت6 افرادشہید ،کئی افراد زخمی


739039-agency-1487136054-219-640x480

مہمند ایجنسی میں خود کش دھماکہ ،3خاصہ دار فورس کے اہلکار سمیت6 افرادشہید ،کئی افراد زخمی

مہمند ایجنسی میں پولیٹکل آفس کے باہر ایک خود کش حملہ آور خود کواڑا لیا جس کے نتیجے میں3خاصہ دار فورس کے اہلکار سمیت 6افراد شہید  جبکہ3لیوئز اہلکار وں سمیت کئی افراد زخمی ہو گئے ۔مہمند ایجنسی کے ہیڈکواٹر غلنئی میں دو خودکش حملہ آوروں نے گھسنے کی کوشش کی جن کو روکنے پر ایک خود کش بمبار نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔ سیکیورٹی اہلکار نےدوسرےدہشت گرد کو گیٹ پرفائرنگ کرکےہلاک کردیا۔ خفیہ اطلاع تھی کہ افغانستان سےخودکش بمبار مہمند ایجنسی میں داخل ہوئے ہیں۔

مہمند ایجنسی میں خود کش دھماکہ ،3خاصہ دار فورس کے اہلکار سمیت6 افرادشہید ،کئی افراد زخمی پڑھنا جاری رکھیں